شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / بارہ سال کا مشکل ترین اور صبر آزما دور ۔۔۔

بارہ سال کا مشکل ترین اور صبر آزما دور ۔۔۔

بارہ سال کا مشکل ترین اور صبر آزما دور گزارنے کے بعد آج وسطی ٹاون سچ مچ روشنیوں کا شہر لگ رھا ہے۔بازاروں میں رات گئے تک رونق رھتی ہے۔ورکشاپوں پر مستری مہینوں کے کام دنوں میں نمٹا رہے ہیں۔کسی کو ٹی وی یا موبائل کی ریپیرنگ کراتے وقت یہ سن کر واپس نہیں لوٹنا پڑرھا کہ بجلی نہیں ہے ہفتے بعد آجایئں۔
چلڈرن ہسپتال میں مائیں بچوں کو ہاتھوں سے پنکھا چلاتی نظر آرہیں ہیں اور نہ ہی جنرل ہسپتال کے مریض کینولا لگے ہاتھوں میں یورین بیگ تھامے لان میں کوئی سایہ ڈھونڈ رہے ہوتے ہیں۔
کچھ سال پہلے بجلی نہ ہونے کی وجہ سے ہمارے ڈسٹرکٹ ھہسپتال میں ڈلیوری کے اکثر کیسز لالٹیں کی روشنی میں نمٹادئیے جاتے تھے۔اور نرس باہر آکر نسخے موبائل ٹارچ کی روشنی میں لکھ کرمنگوایا کرتی تھیں۔
کون بھول سکتا ہے جب ہمارے بالائی علاقوں کے مریض محص بجلی نہ ہونے کی وجہ سے ٹسٹ نہ ہو سکنے پر یا تو واپس لوٹ جاتے یا کسی ھوٹل میں یا رشتہ دار کے ہاں ٹھر جاتے تھے۔
ھر سال عید سے ہفتہ دس دن پہلے شہر کے درذی حضرات مقامی بجلی پر کپڑے سلوانے کے لئے کوغزی میں دوکان ڈھونڈتے پھرتے تھے۔

بعض دوستوں کے کمنٹس اور خیالات پڑھ کر بڑا افسوس ہوتا ھے ۔SRSP کے خلاف احتجاج کا حق تب بنتا جب وہ 2 میگاواٹ کی بجلی مہیا نہ کر پاتے
، رہی بات تقسیم کی وہ تو سیدھی واپڈا کی ذمہ داری بنتی ہے کہ فریقین کے لئے کوئی قابل قبول فارمولا بنالے۔
بحیثیت (چھتراری) ہماری کچھ روایات ہیں۔ان میں سے ایک یہ بھی ہے کہ ایک بھائی کے ساتھ اگر کوئی احسان کرے تو دوسرا اس کو اپنا محسن تصور کرتا ہے۔

ٹاون کے وہ علاقے کہ جہان آج گولین کی بجلی میسر نہیں ان کو احتجاج اس بات پر کرنا چاہیے کہ گانکورینی یا ملاکنڈ والی جو بجلی وسطی ٹاون میں زیر استعمال تھی وہ کہاں گئی؟
ان علاقوں کے نمائندے SRSP والوں کی حوصلہ افزائی کرکے گولین والی بجلی کی ولیٹیج جو کہ 220v سے بھی زیادہ ہے میں مناسب کمی کر کے 180v تک لے آکر مزید بڑی آبادی کو اس بجلی سے مستفید کروا سکتے ہیں۔اگر ایسا ممکن نہ ھو تو بجلی کی گنجائش 2 سے 4 میگاواٹ کروانے اور مزید یونٹس لگوانے پر راضی کرسکتے ہیں ویسے بھی گولین گول اور واٹر چینل دونوں میں مزید پانی کی گنجائش موجود ہے۔

Facebook Comments

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے