شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / محکمہ نیب ، انٹی کرپشن اور صوبائی احتساب کمیشن بلا تا خیر محکمہ پی ڈبلیو ڈی سے تمام دستاویزات حاصل کرکے فوری انکوائری کاآ غاز کریں ۔ .مولانا عبدالااکبر چترالی

محکمہ نیب ، انٹی کرپشن اور صوبائی احتساب کمیشن بلا تا خیر محکمہ پی ڈبلیو ڈی سے تمام دستاویزات حاصل کرکے فوری انکوائری کاآ غاز کریں ۔ .مولانا عبدالااکبر چترالی

پشاور (نمائندہ چترال آفیئرز) جماعت اسلامی کے رہنما سابق ممبر قومی اسمبلی مولانا عبدالااکبر چترالی نے پشاور پریس کلب میں پریس کانفریس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی تاریخ میں پہلی دفعہ کرپشن اور رشوت کی اپنی نوعیت کا انوکھا طریقہ واردات رونما ہوا ہے کہ ایم این اے چترال شہزادہ افتخار الدین نے اپنی صوابدیدی فنڈ کو ٹنڈرکئے بغیر محکمہ پاک پی ڈبلیو ڈی سے ساز باز کرکے اپنے اکاؤنٹ میں جعلی طریقے سے مذکورہ فنڈ ٹرانسفر کراکے اپنے ہوٹل میں اپنی پارٹی کے لوگوں کو رشوت کے طور پر غیر قانونی انداز سے دومہینوں سے تقسیم کر رہا ہے جبکہ پاک پی ڈبلیوڈی کاغذات میں ٹیوب ویل، ھینڈ پمپ اور دیگر ترقیاتی و تعمیراتی کام درج ہیں مزے کی بات یہ ہے کہ اس حوالے سے گاؤں کا نام درج نہیں صرف یوسی کا ذکر ہے کہ اس گاؤں میں کیا کام ہو رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دوقسط تقسیم کر چکا ہے ایک قسط 16کروڑ ر روپے دوسرا قسط 20کروڑر روپے کا ہے ۔ جبکہ تیسرے قسط بھی منظور ہو چکا ہے یہ بھی بیس کروڑ روپے کا ہے ۔ یہ ٹوٹل 56 کروڑر روپے بنتے ہیں ۔ ابھی تک موصوف یہ کہہ رہے تھے کہ مجھے وفاقی حکومت فنڈز نہیں دے رہی انہوں نے محکمہ نیب ، انٹی کرپشن اور صوبائی احتساب کمیشن سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ بلا تا خیر محکمہ پی ڈبلیو ڈی سے تمام دستاویزات حاصل کرکے فوری انکوائری کاآ غاز کریں ۔ اوریہ معلوم کریں کہ رقم کس کس کو دیئے گئے ہیں ۔ اور کتنا ترقیاتی کام ہوچکا ہے ۔اور اس طرح قومی خزانے کو کتنا نقصان پہنچا یا گیا ہے ۔ کیا اس طریقے سے فنڈر کی تقسیم کا کوئی قانونی جواز ہے اسی طرح محکمہ پاک پی ڈبلیوڈی کے ان اہل کاروں کے خلاف بھی جلد بلا تفریق کار وائی کیجائے جو اس کرپشن میں معاؤن کاکردار ادا کئے ہیں ۔ جسکی وجہ سے قومی خزانے کو کروڑوں کا نقصان ہو رہا ہے ۔

Facebook Comments

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Content is protected !!