شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / اسامہ وڑائچ شہید کیرئیر اکیڈمی چترال کی جانب سے طلباء طالبات کے لیے خود آزمائی کا منفرد پروگرام

اسامہ وڑائچ شہید کیرئیر اکیڈمی چترال کی جانب سے طلباء طالبات کے لیے خود آزمائی کا منفرد پروگرام

چترال (بشیر حسین آزاد) اُسامہ احمد وڑائچ شہید اکیڈ یمی چترال میں میٹرک اور انٹرمیڈیٹ امتحانات کے لئے تیاری کرنے والے طلباء وطالبات کے درمیاں خود ازمائی کے امتحان میں نمایان پوزیشن حاصل کرنے والوں میں انعامات تقسیم کئے گئے جس میں ڈپٹی کمشنر چترال ارشاد احمد سودھر مہمان خصوصی تھے جبکہ شعبہ تعلیم سے تعلق رکھنے والے افراد ، ضلعی انتظامیہ کے افسران، انعام یافتہ اسٹوڈنٹس کے والدین کثیر تعداد میں موجود تھے۔ سیکنڈ ائر کے طالب علم اسامہ الرحمن، فرسٹ ائر میں نورصبا، دسویں جماعت کے عبادالرحمن اور نویں جماعت کے خالقداد نے پہلی، سیکنڈ ائر کے عارف حسین ، فرسٹ ایر کے شائستہ زاہد، دسویں کے عندلیب یونس اور نویں جماعت کے فرہین گل نے دوسری اور سیکنڈ ائر کے ارم عزیز، حنیف احمد فرسٹ ائر، تسکین انورجماعت دہم اور نویں جماعت کے دانش حبیب نے تیسری پوزیشن حاصل کی۔ڈی۔ سی چترال ارشاد سودھر کے علاوہ اے ڈی سی منہاس الدین، پروفیسر صاحب الدین، ڈی ای او احسان الحق، ڈی او سوشل ویلفیر نصرت جبین، پرنسپل لینگ لینڈ سکول مس کیری، پرنسل گورنمنٹ ہائی سکول کمال الدین، سابق ڈی ایچ او ڈاکٹر نورالاسلام، محمد حکیم ایڈوکیٹ اور دوسروں نے انعامات تقسیم کئے۔

اس موقع پر اپنے خطاب میں ڈی۔ سی چترال نے کہاکہ اسامہ شہید اکیڈیمی چترال میں کوالٹی تعلیم اور اسٹوڈنٹس کی کیریر سازی کے لئے کوشان ہے اور کامیابی کے دوسال پورے کئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اس سلسلے میں ضلعی انتظامیہ کو سول سوسائٹی کامکمل تعاون اور اخلاقی سپورٹ حاصل ہے جوکہ خوش آئند بات ہے اور یہ بات ہی اس ادارے کی کامیابی کی ضمانت ہے ۔ انہوں نے ضلعے میں تعلیم سمیت ترقی کے مختلف سیکٹروں میں ضلعی انتظامیہ کی کوششوں پر تفصیل سے روشنی ڈالتے ہوئے کہاکہ ان سب کاوشوں میں تعلیم کو بنیادی اہمیت حاصل ہے اور اس سلسلے میں کوئی کمپرومائز نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے مستقبل کے حوالے سے بھی ڈسٹرکٹ ایڈمنسٹریشن کی لائحہ عمل اور اس میں نوجوانوں کی کردار کے بارے میں تفصیل بیاں کی۔ اس سے قبل اکیڈیمی کے کوارڈینیٹر فداء الرحمن نے شہید اسامہ وڑائچ اکیڈیمی کی پروگرام اور خدمات پر روشنی ڈالتے ہوئے اسے علاقے کی تعلیمی ترقی میں ایک سنگ میل قرار دیا۔

Facebook Comments