شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / انصاف یوتھ ونگ ایک فعال تنظیم ہے اور اس پر کوئی اپنے فیصلے مسلط نہیں کرسکتے ۔انصاف یوتھ ونگ چترال اجلاس

انصاف یوتھ ونگ ایک فعال تنظیم ہے اور اس پر کوئی اپنے فیصلے مسلط نہیں کرسکتے ۔انصاف یوتھ ونگ چترال اجلاس

چترال (نمائندہ چترال آفیئرز ) آج مورخہ 24 مارچ بروز ہفتہ پی۔ٹی۔آئی یوتھ ونگ چترال کا ایک اہم اجلاس یوتھ ونگ کے دفتر میں منعقد ہوا ۔جس میں کابینہ کے اراکین نے شرکت کی اور پارٹی امور اور چترال کی مختلف مسائل پر اپنے خیالات کا اظہار کیا۔یوتھ ونگ کی صدارت انصاف یوتھ ونگ چترال کے صدر جناب ضیاء الرحمن نے کی اجلاس میں انصاف یوتھ ونگ کے اراکین نے متفقہ طور پر درجہ ذیل نکات پر مشتمل قراداد منظور کرلیا۔

1۔ انصاف یوتھ ونگ ایک فعال تنظیم ہے اور اس پر کوئی اپنے فیصلے مسلط نہیں کرسکتے ۔
2۔پاکستان تحریک انصاف نوجوانوں کی پارٹی ہے اس کے ہر فیصلہ سازی میں نوجوان بھی برابر کے حقدار ہیں۔
3۔ٹکٹوں کے تقسیم کے وقت تمام ورکرز سے مشاورت کی جائے اور ان کو اعتماد میں لیا جائے۔
4۔تمام ترقیاتی کاموں میں یوتھ ونگ کو بھی اعتماد میں لیا جائے گا۔
5۔رسکیو 1122 کو صحیح معنوں اپریشنل کیا جائے اور چترال کی ضروریات کے مطابق ترجیحی بنیادوں پر چترال غوطہ خور بھرتی کیے جائیں۔
6۔اجلاس میں رسکیو 1122 کو چترال لانے کے لیے ایم پی اے بی بی فوزیہ کی کاوشوں کو سراہاگیا۔
7۔جس طرح یوتھ ونگ اور دیگر پارٹی تنظیمات فعال ہیں۔اس طرح پی ٹی آئی ویمن ونگ کی کابینہ سازی جلد از جلد مکمل کرائی جائے تاکہ پارٹی کے اندر ورکروں کے تحفظات دور کئے جائیں ۔
8۔ڈی ایچ کیو ہسپتال چترال میں کارڈیالوجی موجود ہے اس کو بھی اپریشنل کیا جائے اورکارڈیالوجی کافی الفوربندوبست کیا جائے۔
9۔ڈی ایچ کیو ہسپتال چترال میں آئی اسپشلسٹ نہ ہونے کی وجہ سے مریضوں کو بہت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اس لیے جلد از جلد آئی اسپیشلسٹ کا بندوبست کیا جائے۔

 

اجلاس میں یوتھ ونگ شمولیتی پروگرام اوریوتھ کنونشن کے انعقاد پر بات ہوئی اور یوتھ ونگ چترال کے صدر ضیاء الرحمن اور کابینہ ارکین نے عنقریب یوتھ ونگ شمولیتی پروگرام اور یوتھ کنونشن کے انعقاد پر اتفاق رائے کا اظہار کیا ۔اجلاس کے آخر میں کابینہ کے اراکین نے صدر یوتھ ونگ چترال ضیا ء الرحمن پر اپنے بھر پور بھروسے کا اظہار کیا ۔

Facebook Comments