چترال ( نمائندہ چترالآفئیرز) اپر چترال تحصیل کونسل کے ممبر بی بی  سفینہ نے ایک اخباری بیان میں کہا ہے کہ میں نے قلیل فنڈز سے علاقے کی پسماندگی کو مد نظر رکھتے ہوئے اپر چترال کے میں سو لہ سلائی سنٹر اور تین کمپیوٹر سنٹر کی بنیاد رکھی جس میں ہزاروں کے تعداد میں خواتین تربیت حاصل کر رہی ہیں اور بہت سارے خواتین ان سنٹرز کی وجہ سے بر سر روز گار ہے ۔اس کے علاوہ میں نے اپنے فنڈز سے متاثرہ علاقوں میں پرٹیکشن وال ،لنک روڈز، نہر ،واٹر ٹینکی اور سکول کے نا دار اور ٹیلنٹٹ بچوں اور بچیوں کی حو صلہ افزائی کی ہے اُنہوں نے کہا کہ خواتین کے حقوق کے لیے ہر پلٹ فارم پر آواز اٹھا ؤنگی اور علاقے کی پسماندگی کو مدنظر رکھتے ہوئے خواتین کے لئے با عزت روز گا ر کے مواقع پید ا کرنے کے لیے اپنی جدو جہد جا ری رکھوں گا ۔یاد رہے بی بی سفینہ خواتین کی حقوق کی تحفظ کے لیے سر گرم ایک سو شلز ور کر اورپاکستان تحریک انصاف کی طرف سے تحصیل کونسل اپر چترال کے ممبر ہونے کے ساتھ ساتھ خواتین اسمبلی ڈسٹرکٹ چترال کے بطور اسپیکر نمائند گی کررہی ہے اور آل ویمن کونسلر ا تحاد اپر چترال کے بانی اور چیئر پر سن اور پاکستان تحریک انصاف وومن ونگ اپر چترال کے سرگرم رکن بھی ہے ۔