شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / دروش اوسیک میں سیلاب متاثرین کے ساتھ امداد کرنے پر تمام اداروں کا شکریہ۔وی سی ناظم عمران الملک

دروش اوسیک میں سیلاب متاثرین کے ساتھ امداد کرنے پر تمام اداروں کا شکریہ۔وی سی ناظم عمران الملک

چترال(نمائندہ چترال افىيرز)ویلیج ناظم عمران الملک  نےایک اخباری بیان میں کہا ہے کہ آپ کے علم میں ہے کہ عیدالاضحی کے پہلے دن صبح 5 بجے اوسیک دروش میں ایک تباہ کن سیلاب آیا جس کی وجہ سے درجنوں لوگ بے گھر اور متاثر ہوئے۔اس مصیبت کی گھڑی میں سب سے پہلے دروش پولیس کے جوان Sdpo Drosh  اقبال کریم اور ایس ایچ او دورش بلبل حس کی نگرانی میں اور دروش انتظامیہ کے تحصیلدار عتیق متاثرہ جگہ پہنچے اور رضا کارانہ طور پر ریسکیو کے کاموں میں حصہ لیااور عتیق نے تمام سرکاری اور غیر سرکاری اداروں کے ہائی کمان سے رابطہ کر کے چترال کی تاریخ میں سب سے برق رفتار طریقے سے متاثرہ لوگوں کو ریلیف پہنچایا اور بہت منظم انداز میں تمام اداروں میں کوارڈینیشن کو بخوبی اور احسن طریقہ سے انجام دیا۔اے ڈی سی  چترال منہاس الدین نے ہر لمحے اور موقع پر بحالی کے کاموں کی نگرانی کی ان کی کوششوں کی وجہ سے اسی سلسلے میں آج کمشنر ملاکنڈ ظہیرالاسلام بھی اوسیک تشریف لائے اور متاثرین کی بحالی کے لیے ہر ممکن مدد کرنے کا یقین دلایا پاکستان ہلال احمر کی ٹیم بھی  میڈم شبنم اور غفورکی قیادت میں ریلیف کے آئٹمز لے کر پہنچا جن میں اعلی کوالٹی شیٹس کمبل ہائی جین کٹس لیمپ اسٹوو اور دوسری ضرورت کے سامان موجود تھے لوگوں میں تقسیم کیے ایس آر ایس پی کی ٹیم بھی ٹینٹس لے کر متاثرہ جگہ پہنچی ہم ان سب کا تہہ دل سے مشکور ہیں ۔PHED کے انجنیئر شوکت علی نے بھی اپنے وعدے کے مطابق سیلاب کے دوسرے روز اپنے عملے کے ساتھ ملکر رات 9 بجے تک محنت کر کے پانی بحال کیا جس پر اہلیان علاقہ انجنیئر کے بھی تہہ دل سے مشکور ہیں TMO دروش نے بھی اپنے عملے کے ساتھ ملکر بحالی کے کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا جو کہ قابل تحسین ہے اس کے علاوہ شہزادہ مدثر بھی اپنے ادارے CAD کے اسٹاف کے ساتھ پہنچے اور ہر ممکن مدد کرنے کی یقین دہانی کی مختلف سیاسی رہنماء بھی تشریف لائے ایم پی اے وزیر زادہ  نے بھی ہر فورم پر متاثرین کی آواز پہنچانے کے عظم کا اظہار کیا میں شہزادہ خالد پرویز ممبر ڈسٹرکٹ کونسل چترال جناب قاضی قسوراللہ  ممبر تحصیل کونسل چترال اور الفلاح تنظیم اوسیک کی جانب سے ان تمام اداروں اور حضرات کا شکریہ ادا کرتا ہوں جنہوں نے متاثرین کے ساتھ ہمدردی کی

Facebook Comments
error: Content is protected !!