شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / وریجون کے علاقہ نوگرام کا جھولا پُل 26 اگست سے دریا برد پڑا ہے۔ علاقے کے بچے پل نہ ہونے کی وجہ سے سکول جانے سے قاصر۔

وریجون کے علاقہ نوگرام کا جھولا پُل 26 اگست سے دریا برد پڑا ہے۔ علاقے کے بچے پل نہ ہونے کی وجہ سے سکول جانے سے قاصر۔

چترال(گل حماد فاروقی) چترال کے بالائی علاقے ملکہو میں موژ گول اور وریجون کے درمیان نوگرام کے علاقے میں دریا پر لکڑی کا جھولا پُل 26 اگست کو سیلاب کی وجہ سے تباہ ہو ا ہے اور یہ پل ابھی تک حراب پڑ ا ہے۔ جس کے نتیجے میں سو افراد راستے سے محروم ہیں۔ 


ناصرالدین ناظم ویلیج کونسل نوگرام کا کہنا ہے کہ چبیس تاریح کو یہ پل دریا کے پانی نے تباہ کیا اور ابھی تک کسی نے پوچھا بھی نہیں نہ ہی اس کے معائنے یا دوبارہ تعمیر کیلئے کوئی ذمہ دار شحص آیا ہے۔ ان کے مطابق علاقے کے لوگ پل نہ ہونے کی وجہ سے سخت تکلیف سے دوچار ہیں اور دریا کے اُس پار لوگ اپنی ضروریات زندگی نہایت پر حطر پہاڑی راستوں پر چڑھ کر لاتے ہیں۔ 
فیصل جو نویں کلاس کا طالب علم ہے اس کا کہنا ہے کہ جب سے یہ پل گرا ہوا ہے اس دن سے ہم سکول نہیں جاتے اور میرے جیسے اور بھی کئی سکول کے بچے تعلیم سے محروم رہ گئے ۔ انہوں نے وفاقی اور صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا کہ اس پُل کو جلد از جلد دوبارہ تعمیر کرے تاکہ نہ صرف سکول کے بچے سکول جاسکے بلکہ علاقے کے لوگ بھی اپنی ضروریات زندگی آسانی سے اس پل سے گزر کر لائے۔ واضح رہے کہ یہ علاقہ 2015 کے سیلاب میں بری طرح متاثر ہوا تھا اس وقت آس پاس تمام پل سیلاب کی وجہ سے تباہ ہوئے تھے صرف یہ پل بچ گیا تھا جو اب تباہ ہوا۔ پل کا آدھا حصہ دریا میں پڑا ہے اور آدھا حصہ ٹھیک ہے جسے آسانی سے دوبارہ مرمت کیا جاسکتا ہے۔ 

Facebook Comments