بروغل کے لوگ غربت کے لکھیر سے بھی نیچے زندگی گزار رہے ہیں۔ Entertainment کے ذرائیع نہ ہونے کی وجہ سے لوگ اکثر افیون کا نشہ کرتے ہیں۔اس وادی تک جانے والا سڑک کچا ہے اور سیاحوں کو اگرچہ راستے پر مشکل کا سامنا کرنا پڑتا ہے مگر جب وہ اس وادی میں داحل ہوتا ہے تو یوں محسوس ہوتا ہے کہ و ہ ایک نئے دنیا میں داحل ہوا اور یہ جنت نظیر وادی سیاحوں کا دل بہلاتا ہے۔ بروغل کے غاری دور نامی جگہہ نہایت خوبصورت ہے خواتین بھی کھیتی باڑی کا کام کرتی ہے اور بچیاں بکریاں چھراتے ہیں آس پاس سرسبز پہاڑ جن کی چوٹیوں پر اکثر برف پڑی ہوتی ہے ماضی میں یہاں کافی تعداد میں غیر ملکی سیاح آیا کرتے تھے مگر آج کل بہت زیادہ پابندیوں اور ویزے میں مشکلات کی وجہ سے بہت کم غیر ملکی سیاح آتے ہیں۔ اگر اس وادی تک جانے والی سڑکیں بہتر بنائی جائے تو یہاں کافی تعداد میں ملکی اور غیر ملکی سیاح آئیں گے جس سے مقامی لوگوں کی معیشت پر مثبت اثرات پڑیں گے۔ (بروغل کا سفر جاری ہے)