شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / بی .ایچ.یوہسپتال لوٹ اویر پچھلے 5 سالوں سے کسی مسیحے کا منتظر ہے

بی .ایچ.یوہسپتال لوٹ اویر پچھلے 5 سالوں سے کسی مسیحے کا منتظر ہے

چترال(نمائندہ چترال آفئیرز)علاقہ لوٹ اویر کے سماجی کارکن اختر حسین چترالی نے ایک اخباری بیان میں کہا ہے کہ لوٹ اویر میں ایک بی ایچ یو.ہسپتال ہے جسکی حا لت بہت خراب ہے. یہ پہلی بار نہیں میں نےپچھلے سال بھی اسکی ویڈیوز اور تصاویر اپلوڈ کی تھی.اُنہوں نے کہا کہ یہ ہسپتال تقریباً 1200 گھرانوں کا ایک ہسپتال ہے میں پچھلے سال اخبار میں بھی دیا تھا اور میں نے KPK CITIZEN PORTALکمپلینٹ بھی کیا جس پر ایکشن لے کر ڈی ایچ او ڈاکٹر اسراراس کیس کو آگے ریفر کیا تھا مگر ابھی تک اس پر کوئی عمل نہ ھوا .علاقے کے لوگ یہ مطالبہ کرتے ہیں کہ خدارا یہ بی ایچ یو کی جو باقی دیواریں جو بچ گئی ہیں انکو بھی گرا کر لے جائیں اس میں کوئی ٹینٹ کا بندوبست کر لیں اور دوائیاں مریضوں کو میسر ہوں.چار دیواری یا خوبصورت بلڈنگ بنانے سے کوئی فایدہ نہیں ہےاس میں ٹینٹ لگا کر ادوییات مھہیا کی جائیں تو مہربانی ہوگی.اُنہوں نے کہ اس ہسپتال میں ایک وزن چیک کرنے کی مشین اوربلڈ پریشر چیکنگ الہ کے علاہ اور کچھ بھی نہیں ہیں۔اور ڈاکٹر شیر عبداللٰہ واقعی شیر ہے جو ایک ٹوٹی کرسی اور اور ادھا ٹوٹا ھوا ٹیبل پر مشتمل بے درو دیوار کھنڈر کے اندر بیٹھ کر ٹھنڈ کی پرواہ کیے بغیر عوام کی خدمت کو عبادت سمجھ کر اپنی فرائض منصبی اچھے طریقے سے سر انجام دے رہا ہے جو قابل تعریف ہے. اُنہوں نے کہا کہ پاپولیشن ویلفیر کے نام سے ایک ادارہ پچھلے 3 سالوں سے کھلا ہے جہاں ابھی تک کوئی سٹاف نہیں آیا ہےاور پوچھنے پر یہی جواب آتا ہے کہ راستے خطرناک ہیں اور علاقہ ٹھنڈآ ہے جس کی وجھ سے سٹاف نہیں آتا ہے .ڈی ایچ کیو ہسپتال دور ہونے کی وجہ سے لوگ ذیا دہ تربروقت علاج نہ ہونے کی وجہ سے موذی امراض میں مبتلا ہیں.اور بہت فوت بھی ہوچکے ہیںں.اب علاقے کے لوگ یہ مطالبہ کرتے ہیں کہ خدارا ہم پر رحم کیا جائے.ہم بھی پاکستانی ہیں.اُنہوں نے وزیر اعظم عمران خآن.وزیراعلٰی کے.پی.کے.ایم ,این,اے عبدالاکبر چترالی .ایم پی اے مولانا ھدایت الرحمن اور ڈی .ایچ او چترال سے درخواست کیا ہے کہ اسکا فوری نوٹس لے کر اس پر عمل در آمد کیا جائے .اور علاقے کے لوگون پر رحم کیا جائے
Facebook Comments