شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / چترال، طالبہ کی خودکشی کے ذمہ دار ملزم کو 2 سال قید بامشقت

چترال، طالبہ کی خودکشی کے ذمہ دار ملزم کو 2 سال قید بامشقت

چترال (    نمائندہ  چترال   )خیبر پختونخوا کے ضلع چترال میں مقامی عدالت نے اسکول کے سوئپر کو طالبہ کی خودکشی کا ذمہ دار قرار دیتے ہوئے اسے 2 سال اور 6 ماہ قید بامشقت کی سزا سنائی ہے۔ چترال کے علاقہ بونی لاسپور میں گورنمنٹ ہائیر سیکنڈری اسکول کی طالبہ طاہرہ نے اگست 2016 میں اسکول کے اندر زہر کھا کر خودکشی کی تھی جس پر اس کے والد نے مقدمہ درج کراتے ہوئے پولیس کو بتایا کہ اسکول کا سوئپر دیدار علی اس کو ہراساں کرتا رہتا تھا جس سے تنگ آکر طاہرہ نے خودکشی کرلی۔ عدالتی دستاویزات کے مطابق طاہرہ نے دسمبر 2015 میں اسکول انتظامیہ اور پولیس کو شکایت کی تھی سوئیپر دیدار علی اس کو ہراساں کر رہا ہے اور اس نے ریپ کرنے کی بھی کوشش کی جس پر سوئیپر کو معطل کردیا گیا مگر مزید کارروائی نہیں ہوئی اور پولیس سمیت اسکول انتظامیہ نے معاملہ دبانے کی کوشش کی۔ دریں اثنا سوئپر اس کے بعد بھی طاہرہ کو ہراساں کرتا رہا اور 5 اگست 2016 کو طاہرہ نے دوبارہ اسکول پرنسپل کو شکایت لگائی اور پوچھا کہ سوئپر کو ابھی تک نوکری سے نکالا کیوں نہیں گیا جس پر پرنسپل نے انہیں بتایا کہ معاملے کی تحقیقات جاری ہیں۔ طاہرہ نے اسی وقت اسکول کے ایک کمرے میں جاکر زہر کھالی اور زندگی کا خاتمہ کردیا۔ اگلے روز 6 اگست کو طاہرہ کے والد نے ایف آئی آر درج کرواتے ہوئے ملزم دیدار علی کو نامزد کیا۔ مقدمہ جوڈیشل مجسٹریٹ کی عدالت میں چلا جس میں متعدد گواہان نے پیش ہوکر ملزم دیدار علی کے خلاف گواہی دی۔ جرم ثابت ہونے پر جوڈیشل مجسٹریٹ نے ملزم دیدار علی کو ڈھائی سال قید بامشقت کی سزا سنائی

Facebook Comments
error: Content is protected !!