شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / گولین گول پاور ہاٶس کو چلانے کیلیے جلد از جلد بھاری مشینریوں کا بندوبست کرکے کام کسی معیاری کنسٹرکشن کمپنی کو کنٹریکٹ دیا جاۓ ورنہ بحالی کے لیے ایک سال سے زائد کا عرصہ بھی ناکافی ہے۔ اعجاز احمد نائب ناظم وی سی کوغذی

گولین گول پاور ہاٶس کو چلانے کیلیے جلد از جلد بھاری مشینریوں کا بندوبست کرکے کام کسی معیاری کنسٹرکشن کمپنی کو کنٹریکٹ دیا جاۓ ورنہ بحالی کے لیے ایک سال سے زائد کا عرصہ بھی ناکافی ہے۔ اعجاز احمد نائب ناظم وی سی کوغذی

چترال (ایم۔فاروق) 8جولاٸی کو گولین گول میں گلیشٸر پھٹنے کی وجہ سے تباہ کن سیلاب آیا تھا جس کی وجہ سے ڈیم میں بہت زیادہ مقدار میں ملبہ جمع ہوا ہے ۔ ڈیم تک واپڈا کی پکی روڈ کٸی جگہوں سے سیلاب برد ہوگئی۔  واپڈا نے 3 آر سی سی پل بناۓ تھے لیکن ناقص پروٹیکشن والز کی وجہ سے تینوں پلوں کے دونوں اطراف کی اپروچ روڈ سیلاب میں بہہ گئیں اور بڑے پیمانے پر روڈ کو نقصان پہنچا ۔

اب ہیوی مشینری کے بغیر ڈیم کی صفاٸی ناممکن ہے اور مشینری ڈیم تک پہنچانے کیلیے روڈ کو بحال کرنا ضروری ہے روڈ کو جلد بحال کرنے کیلیے کسی بڑے کنسٹرکشن کمپنی کو کنٹریکٹ دینا چاہیے تھا لیکن ایک چھوٹا سا wheel excavator اور ایک ڈمپر کام کر رہے ہیں اور کام کی رفتار سے لگ رہا ہے کہ ڈیم تک پہنچنے میں کم از کم ایک سال کا عرصہ لگے گا واپڈا کے ارباب اختیار سے گزارش ہے کہ گولین گول پاؤر ہاٶس کو چلانے کیلیے جلد از جلد بھاری مشینریوں کا بندوبست کرکے کام کسی مستند کمپنی کو دیا جاۓ، گولین پاور ہاٶس کی پومیہ آمدنی دو کروڑ روپے سے زاٸد ہے، اس نقصان سے بچنے کیلیے بحالی کے کام کی رفتار تیز کرنا پڑے گا اس طرح متاثرین گولین کو بھی فوری ریلیف پہچایا جا سکے گا۔

Facebook Comments
error: Content is protected !!