شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / گدھا پولو وادی بروغل میں سیاحوں کی توجہ کا مرکز بنا۔

گدھا پولو وادی بروغل میں سیاحوں کی توجہ کا مرکز بنا۔

چترال(گل حماد فاروقی) پولو بادشاہوں کا کھیل یا کھیلوں کا بادشاہ سمجھا جاتا ہے۔ جس کیلئے شاہی سواری یعنی گھوڑا لازم جز ہے۔ مگر چترال کے شاہی  مزاج لوگ جب شاہی سواری نہیں پاتے تو بادشاہوں کا یہ کھیل یعنی پولو  گدھے سے بھی کھیلتے ہیں۔
وادی بروغل کا تکن والی سفر کرنے کے بعد جب کوئی سیاح مسلسل سولہ گھنٹے سفر کرتا ہے تو کافی اکتا  جاتا ہے مگر جنت نظیر وادی بروغل میں پہنچ کر گدھا پولو کا میچ  ان کی تمام تر تکاوٹ دور کردیتی ہے۔  گدھا پولو وادی بروغل کی حاص کھیل ہے جس میں کل بارہ کھلاڑی حصہ لیتے ہیں مگر یہ چونکہ یہ فری سٹائل کھیل ہے  تو اس میں کھلاڑیوں کا تعداد کم و زیادہ بھی ہوسکتا ہے۔
گھوڑا پولو اور گدھا پولو میں فرق صرف اتنا ہے کہ گدھے کو ہانک کر بال کے پیچھے دوڑانا پڑتا ہے جبکہ گھوڑا  تربیت یافتہ ہونے کی وجہ سے  خود بال کے پاس پہنچ جاتا ہے اور کھلا ڑی آسانی سے بال کو آگے بڑھا کر گول کرنے کی کوشش کرتا ہے۔
گدھا پولو میں دلچسپ منظر اس وقت پیش آتا ہے جب کوئی ضدی گدھا آگے بڑھنے سے انکار کرتا ہے  تو محالف ٹیم کا کھلاڑی آگے ہوکر اسی بال کے کھینچ کر اپنے ٹیم کے پاس پھنکتا ہے اور یوں اس کے ہاتھ بال نکل کر اس کے حلاف گو ل ہوجاتا ہے۔
گدھا پولو میں اکثر گدھے تربیت یافتہ نہیں ہوتے اور کھلاڑی بھی چھوٹے عمر کے ہوتے ہیں جبکہ اس کیلئے میدان کا فاصلہ بھی کم رکھا جاتا ہے۔ گول ہونے کے بعد کھلاڑی بال کو ہاتھ میں پکڑ کر دوڑتے ہوئے اسے پھنکتا ہے مگر کبھی کھبار یہ بال نیچے بھی گرتا ہے۔
وادی بروغل میں گدھا پولو کو دیکھنے کیلئے کافی تعداد میں مقامی لوگ آئے تھے جن میں چند سیاح  دیگر علاقوں سے بھی آئے تھے اور یورپین یونین کے نمائندوں نے بھی تھوڑی  دیر کیلئے اس کھیل سے لطف اٹھایا۔
آحر میں چلمر آباد کے ٹیم نے غاری کے ٹیم کو شکست دیکر ٹرافی اپنے نام کردی جن کو ڈپٹی کمشنر چترال بالا نے انعامات بھی دئے۔ اس موقع پر پاکستان تحریک انصاف کے ضلعی صدر عبد الطیف، سپورٹس آفیسر فاروق اعظم، ایجوکیشن افیسر محمود غزنوی، اسسٹنٹ کمشنر اپر چترال اور غیر سرکاری اداروں کے نمائندے بھی موجود تھے۔
Facebook Comments