شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / گذشتہ کئی سالوں سے ارندو کے جنگلات کی جس طرح بے دریغ کٹائی کرکے افغانستان اور دیر کے راستے سمگلنگ ہو رہی ہے۔ انعام کے طور پر یہ پوسٹیں ارندو کو دی جارہی ہیں۔ محکمہ ہیلتھ میں حالیہ بھرتیوں میں بھی بے قاعدگیوں پر انتہائی افسوس یہ انصاف کی حکومت کے ماتھے پر کلک کا ٹیکہ ہے۔ یوسی شیشی کوہ کے نمایندگان

گذشتہ کئی سالوں سے ارندو کے جنگلات کی جس طرح بے دریغ کٹائی کرکے افغانستان اور دیر کے راستے سمگلنگ ہو رہی ہے۔ انعام کے طور پر یہ پوسٹیں ارندو کو دی جارہی ہیں۔ محکمہ ہیلتھ میں حالیہ بھرتیوں میں بھی بے قاعدگیوں پر انتہائی افسوس یہ انصاف کی حکومت کے ماتھے پر کلک کا ٹیکہ ہے۔ یوسی شیشی کوہ کے نمایندگان

چترال (محکم الدین) یونین کونسل شیشی کوہ کے نمایندگان اور عمائدین نے محکمہ فارسٹ چترال اور محکمہ ہیلتھ چترال کی طرف سے آسامیاں پُر کرنے کے سلسلے میں پسماندہ علاقہ شیشی کوہ کو مکمل نظر انداز کرنے اور سوتیلی ماں کا سلوک روا رکھنے پر شدید رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے فوری طور پر فیصلہ واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ پیر کے روز چترال پریس کلب میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سابق ممبر ڈسٹرکٹ کونسل چترال شیر محمد، سماجی رہنما حاجی انظر گُل، سیف اللہ ناظم ویلج کونسل شیشی کوہ، عبدالقیوم و فضل الرحمن کونسلرز، امیر حمزہ کونسلر مڈکلشٹ عبدالقدوس سابق ممبر یوسی وغیرہ نے کہا۔ کہ علاقہ شیشی کوہ جنگلاتی ایریا ہے۔ لیکن محکمہ فارسٹ نے فارسٹ کی 22آسامیاں مشتہر کرکے اُن میں سے 9آسامیوں کو صرف ارندو کیلئے مخصوص کر دیا ہے۔ جو کہ تمام جنگلاتی ایریا خصوصا ًشیشی کوہ وادی کے ساتھ زیادتی کے مترادف ہے۔ انہوں نے کہا۔ کہ اس سے معلوم ہو رہا ہے۔ کہ گذشتہ کئی سالوں سے ارندو کے جنگلات کی جس طرح بے دریغ کٹائی کرکے افغانستان اور دیر کے راستے سمگلنگ ہو رہی ہے۔ انعام کے طور پر یہ پوسٹیں ارندو کو دی جارہی ہیں۔ انہوں نے محکمہ ہیلتھ میں حالیہ بھرتیوں میں بھی بے قاعدگیوں پر انتہائی افسوس کا اظہار کیا اور کہا کہ یہ انصاف کی حکومت کے ماتھے پر کلک کا ٹیکہ ہے۔ کہ پوری شیشی کوہ وادی کے بی ایچ یو کاڑاس میں کلاس فور بھرتی کرنے کیلئے ان کو بندہ نہیں ملا۔اور 100 کلو میٹر دور بمبوریت سے تعلق رکھنے والے ایک شخص کو کاڑاس بی ایچ یو میں کلاس فور لگا دیا گیا۔ انہوں نے محکمہ فارسٹ اور محکمہ ہیلتھ کو خبر دار کیا کہ فوری طور پر یہ امتیازی سلوک ختم کیا جائے۔ ارندو کے لئے مخصوص کردہ فارسٹ گارڈ کے پوسٹوں کو پورے جنگلاتی علاقوں میں کوٹہ سسٹم کے تحت تقسیم کیا جائے۔ یا اوپن رکھا جائے۔ تاکہ ہر کوئی مقابلے میں شریک ہو سکے۔ انہوں نے محکمہ ہیلتھ کو خبردار کیاکہ نو تقرر شدہ کلاس فور شعیب اختر کو کسی صورت کڑاس بی ایچ یو میں ڈیوٹی کرنے نہیں دیا جائے گا۔ اسے فوری تبدیل کیا جائے۔ انہوں نے نے ایم پی ایز پر بھی شدید تنقید کرتے ہوئے کہاکہ وہ اپنے اختیارات سے تجاوز کر رہے ہیں۔ جسے کسی صورت قبول نہیں کی جائے گا۔

Facebook Comments
error: Content is protected !!