شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / ورکشاپ ایسوسی ایشن تجار یونین کا اٹوٹ حصہ ہے۔سازشی عناصر کی جانب سے ورکشاپ ایسوسی ایشن کو تجار یونین سے علیحدہ کرنا ہمیں کسی بھی صورت نا منظور ہے۔ محمد عیسی صدر ورکشاپ ایسوسی ایشن چترال

ورکشاپ ایسوسی ایشن تجار یونین کا اٹوٹ حصہ ہے۔سازشی عناصر کی جانب سے ورکشاپ ایسوسی ایشن کو تجار یونین سے علیحدہ کرنا ہمیں کسی بھی صورت نا منظور ہے۔ محمد عیسی صدر ورکشاپ ایسوسی ایشن چترال

چترال (نمائندہ چترال آفیئرز) آل چترال ورکشاپ ایسوسی ایشن کے صدر محمد عیسیٰ نے اپنے ایک اخباری بیان میں کہا کہ وہ سب سے پہلے اپنے تمام دوست و احباب کو گزشتہ عید کی مبارک باد پیش کرتے ہیں۔اور انتہائی تشویش کے ساتھ اس بات کا اظہار کیا کہ کچھ عناصر کی جانب سے آل چترال ورکشاپ ایسوسی ایشن کو تجار یونین سے علیحدہ کرنے کی بات کرتے ہیں۔جو کہ ایک غلط قدم ہے آل چترال ورکشاپس ایسوسی ایشن ہمیشہ سے تجار یونین کا حصہ رہا ہے۔اور موجودہ تجار یونین کے صدر شبیر احمد کی قیادت میں مزید مضبوطی کی طرف گامزن ہے۔جو سازشی عناصر کو ایک انکھ نہیں بھاتا۔ان کا کہنا تھا کہ میں بطور ورکشاپس ایسوسی ایشن صدر ان عناصر کی اس اقدام کی پھر پور مزمت کرتا ہوں۔ورکشاپس ایسوسی ایشن تجار یونین کا اٹوٹ حصہ ہے۔جسے علیحدہ کرنا ہمیں ہر صورت نا منظور ہے۔انہوں نے کہا کہ میں جناب ڈی سی صاحب لوئر چترال سے پرزور مطالبہ کرتا ہوں کہ ان عناصر کی اس سازش کو کسی بھی قیمت پر کامیاب نہ ہونے دیں۔چونکہ ورکشاپس ایسوسی ایشن کئی سالوں سے تجار یونین کا حصہ ہے۔چند عناصر اپنے آپ کو عبوری
صدر بنا کر آل ورکشاپ ایسوسی ایشن کو تجار یونین سے علیحدہ کرنا چاہتے ہیں۔جو کہ ہمیں کسی بھی صورت منظور نہیں اور نہ ہی جسے ہم تسلیم نہیں کریں گے۔آل ورکشاپ ایسوسی ایشن ابھی تک تجار یونین کا حصہ ہے اور رہے گا۔اگر آل ورکشاپ ایسوسی ایشن کو تجار یونین سے الگ کیا گیا تو تمام تر ذمہ داری ان چند عناصر پر عائد ہوگی جنہوں نے خود کو برائے نام عبوری صدر بنا رکھا ہے جن کی کوئی حیثیت نہیں ۔یاد رہے کہ تجار یونین کے انتخابات 2018 میں ہوئے تھے جس کی مدت پانچ سال یعنی 2023 تک ہے۔جبکہ تجار یونین کے نئے انتخابات 2023 کو ہونگے۔اس سے قبل بھی تجار یونین کی مدت صدارت پانچ سال رہی ہے۔

Facebook Comments
error: Content is protected !!