شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / سابق ضلع ناظم معغرت شاہ اور صوبائی امیر کے درمیان اختلافات شدت اختیار کرگئے،پی ٹی آئی سے دعوت

سابق ضلع ناظم معغرت شاہ اور صوبائی امیر کے درمیان اختلافات شدت اختیار کرگئے،پی ٹی آئی سے دعوت

چترال (نمائندہ چترال آفیئرز ) جماعت اسلامی خیبر پختونخوا کے امیرسینیٹر مشتاق احمد خان اور چترال کے سابق ضلع ناظم اور امیر ضلع حاجی مغفرت شاہ کے درمیان اختلافات شدت اختیار کرگئے جس کے بعد حکمران جماعت پی ٹی آئی کے مرکزی رہنماؤں نے ان کو دعوت دینے کے لئے رابطہ کرچکے ہیں جبکہ بعض ذرائع کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے بھی بذات خود رابطہ کیا ہے۔

جمعہ کے روز کاروان انقلاب مارچ کی چترال سے وزیرستان روانگی کے وقت حاجی مغفرت شاہ کا غیر حاضر رہنا اس خبر کو تقویت پہنچانے کے ساتھ جماعتی حلقوں میں موضوع بحث بنی ہوئی ہے۔ ذرائع نے بتا یا ہے کہ امیر ضلع مولانا اخونزادہ رحمت اللہ اور حاجی مغفرت شاہ کے درمیان بھی تعلقات کی نوعیت دوستانہ نہیں ہیں جن کی امارت سنبھالنے کے بعد سے وہ جماعتی سرگرمیوں میں دلچسپی ظاہر نہیں کررہے ہیں جبکہ سوشل میڈیامیں جماعتی حلقے اس بات پر سوال اٹھار ہے ہیں کہ جمعہ کے دن اس اہم تقریب میں جماعت کے اکثر اراکین اور کئی سینئر رہنما بھی موجود نہیں تھے۔

سیاسی حلقوں کا کہنا ہے کہ عوام میں مقبولیت رکھنے والے حاجی مغفرت شاہ کے جماعت سے جانے کے بعد پارٹی کی پوزیشن انتہائی کمزور ہوجائے گی جبکہ پورے ملک میں چترال وہ واحد حلقہ ہے جہاں سے گزشتہ عام انتخابات میں قومی اسمبلی کا ممبر منتخب ہوسکاتھاجس میں انہوں نے کلیدی کردار ادا کیا تھا۔

بار بار کوشش کے باوجود حاجی مغفرت شاہ کے ساتھ رابطہ نہ ہوسکاجس کا فون مسلسل بند آرہا تھا۔جب چترال میں پی ٹی آئی کے بانی صدر اور سینئر رہنما عبداللطیف سے اس خبر کے بارے میں استفسارکیا گیا تو انہوں نے کہاکہ وہ نہ تو اس خبر کی تصدیق کرسکتے ہیں اور نہ ہی نفی۔

اُدھر جماعت اسلامی کے دیرینہ رکن اور یونین کونسل بروز کے سابق ناظم عبدالحق نے بھی پارٹی قیادت کے ساتھ اختلافات کے بعد پارٹی کی بنیادی رکنیت سے استعفیٰ دینے کا اعلان کردیا ہے اور سوشل میڈیا میں ان کی طرف سے پوسٹ ہونے کے بعد حاجی مغفرت شاہ کا پارٹی چھوڑنے کی خبروں کو تقویت مل رہی ہے
بشکریہ: چترال ٹائمز

Facebook Comments
error: Content is protected !!