شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / پیسکو آفس چترال میں میٹر ریڈر،بل ڈسٹری بیوٹر اور لائن مین کی خالی آسامیوں کو پُرکرکے صارفین کو ذہنی اذیت سے نجات دلائی جائے

پیسکو آفس چترال میں میٹر ریڈر،بل ڈسٹری بیوٹر اور لائن مین کی خالی آسامیوں کو پُرکرکے صارفین کو ذہنی اذیت سے نجات دلائی جائے

چترال(نمائندہ چترال آفیئرز)چترال کے22ہزاربجلی صارفین نے لائن کی خرابی،بلوں کی تقسیم میں کوتاہی اور میٹر ریڈنگ کے بغیر اندھا دھند بل دینے کے خلاف شدید احتجاج کیا ہے۔ایک مشترکہ بیان میں جماعت اسلامی کے حکیم مجیب اللہ، نوید احمد،پی پی پی کے عالمزیب ایڈوکیٹ،قاضی فیصل،پی ٹی آئی کے ضیاالرحمن،نذیراحمد،جے یوآئی کے قاضی نسیم اور سمیع فیض آبادی نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا ہے کہ 1985میں بجلی صارفین کی تعداد6ہزار تھی چترال کے واپڈا آفس میں 116ملازمین تھے2021ء میں صارفین کی تعداد 22ہزار ہے دفتر میں 82آسامیاں خالی ہیں۔منظور شدہ آسامیوں پرسٹاف بھرتی نہیں کی جارہی ہے صارفین نے اس بات پر دکھ کا اظہار کیا ہے کہ پیسکو واپڈا کے چترال دفتر میں میٹر ریڈر کی21آسامیوں میں سے15آسامیاں خالی ہیں،لائن مینوں کی53آسامیوں میں سے42آسامیاں خالی ہیں جبکہ بل ڈسٹری بیوٹرز کی11آسامیاں تھیں اب ایک بھی بل ڈسٹری بیوٹر نہیں ہے۔واپڈا پیسکو کی غفلت کے نتیجے میں عوام کوہرماہ جرمانہ بھرنا پڑتا ہے صبح سے شام تک پیسکو آفس میں شکایت کرنے والوں کی قطار لگی رہتی ہے۔صارفین نے یاد دلایا ہے کہ نومبر 2018میں مولانا عبدالاکبر چترالی نے قومی اسمبلی میں یہ مسئلہ اُٹھایا تو متعلقہ وزیر عمرایوب نے خالی آسامیوں کو پُر کرنے کا وعدہ کیاتھا 3سال گذرگئے ایک میٹر ریڈر،بل ڈسٹری بیوٹر یا لائن مین بھرتی نہیں ہوا۔چترال کے بجلی صارفین نے وزیراعظم عمران خان،وزیرتوانائی اور وزیراعلیٰ محمود خان سے پُرزور مطالبہ کیا ہے کہ واپڈا پیسکو کے چترال دفتر میں میٹر ریڈر،بل ڈسٹری بیوٹر اور لائن مین کی خالی آسامیوں کو پُرکرکے صارفین کو مالی خسارہ،بجلی کے بریک ڈاون اور ذہنی اذیت سے نجات دلائی جائے۔

Facebook Comments
error: Content is protected !!