شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / سی ڈی ایل ڈی کے ملازمین اور عوامی حلقوں کی جانب سے سی ڈی ایل ڈی ملازمین کے سروسز ریگولرائزیشن کے حق میں ٹویٹر پر ٹرینڈ چلایا گیا۔جس کو عوامی حلقوں سے بھرپور پزیرائی ملی اور ٹویٹر پر ٹاپ ٹرینڈ رھا۔

سی ڈی ایل ڈی کے ملازمین اور عوامی حلقوں کی جانب سے سی ڈی ایل ڈی ملازمین کے سروسز ریگولرائزیشن کے حق میں ٹویٹر پر ٹرینڈ چلایا گیا۔جس کو عوامی حلقوں سے بھرپور پزیرائی ملی اور ٹویٹر پر ٹاپ ٹرینڈ رھا۔

پاکستان (نمائندہ چترال آفیئرز)سی ڈی ایل ڈی کے ملازمین اور عوامی حلقوں کی جانب سے سی ڈی ایل ڈی ملازمین کے سروسز ریگولرائزیشن کے حق میں گزشتہ رات ٹویٹر پر ٹرینڈ چلایا گیا۔جس کو عوامی حلقوں سے بھرپور پزیرائی ملی اور ٹویٹر پر ٹاپ ٹرینڈ رھا۔عوامی حلقوں اور
سی ڈی ایل ڈی کے تین سو ملازمین نے اپنے سروسز کے ریگولرائزیشن کا مطالبہ کردیا۔

صوبہ بھرکے 13 اضلاع میں سی ڈی ایل ڈی پروگرام گزشتہ6 سال سے کامیابی سے جاری ہے اور اس پروگرام کے تحت کمیونٹی کے نشاندہی پر ان کے ہزاروں مسائل انہی کے ہاتھوں حل ہو ئے ہیں۔ گزشتہ رات ٹویٹر پر یک نکاتی ایجنڈا(ریگولرائزیشن) پر کام تیز کرنے کا مطالبہ تھا۔ عوامی حلقوں کا کا کھنا تھا کہ صوبہ بھر کے 13 اضلاع میں سی ڈی ایل ڈی پروگرام گزشتہ6 سال سے کامیابی سے جاری ہے اور اس پروگرام کے تحت کمیونٹی کے نشاندہی پر ان کے ہزاروں مسائل انہی کے ہاتھوں حل ہو ئے ہیں۔ ملازمین نے کہا 6سال سے زیادہ سے فکسڈ تنخوا پر کام کررہے ہیں۔اور ان کی تقرریاں پی ٹی ایس اور این ٹی ایس کے زریعے ہوچکی ہے۔اب چونکہ سی ڈی ایل ڈی کا آخری سال چل رھا ھے ۔لھزا یہ ان کا حق ھے کہ ان کو ریگولر کیا جاے۔
ملازمین نے وزیرِ اعلیٰ محمود خان اور حکومت وقت سے سی ڈی ایل ڈی سٹاف کے ریگولرائزیشن پر کام تیز کرنے کا مطالبہ کیا۔

Facebook Comments
error: Content is protected !!